Monday, August 29, 2011

Heart-Breaking Poem for Karachi

میں عید کیسے مناؤں؟

میں عید کیسے مناؤں؟
کیا تم عید مناؤ گے؟

میرا شہر لہو سے لال ہے 
تم عید کے رنگ کہاں سے لاؤ گے؟

رش سا لگا ہے کفن کی دکان پر 
تم کپڑے کہاں سے سلواؤ گے؟

ہر گلی میں لاشیں بکھری ہیں 
پھر رونق کیسے آے گی؟

یہاں تو سب کی قومیت الگ ہے
کیا صرف عید کے مسلمان بن جو گے؟
Picking dead bodies of our loved ones, seems like one thing Karachietes are getting used to
Disclaimer: I got this poem as a Text message and I don't own of it. Words and the writings of this poem are the original works of its author/authors

1 comment:

  1. Our Sympathy are with the People of Pakistan Dudes. Above the Picture this statement what does it translate to